فضلِ ربّی – قدسیہ ملک

رب کا فضل ہم پہ یہ ایقان رہے گا
اللہ پر مضبوط جب ایمان رہے گا
اسکومنالوتم انہی مصروف ساعتوں میں
معافی وہ دینے والا اک رحمان رہےگا
دنیاپلٹ رہی ہے بخشش کو تک رہی ہے
ناکام و نامراد اب شیطان رہےگا
آٹاہے نہ ہےچینی گیس بجلی کی بےچینی
سڑکوں پہ بھی اب لوگوں کا بحران رہےگا
اسپین ہو اٹلی وہ فرانس ہو یا ووہاں
وحشت سے چار سو وہاں کہرام رہے گا
جسکا ہےکھویابچہ ان کرب کےدنوں میں
جنت میں اس کے ساتھ وہ غلمان رہے گا
جو شرکےساتھ ہونگےمشکل اٹھائیں گےسب
بےکس پہ رب کا ہر سویہ فیضان رہے گا

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: