لگے رہو … ڈٹے رہو! – زبیر منصوری

مارے ہاں یہ عام سی بات ہے ! مگر شاید باقی پارٹیوں کے ورکر ز کے لئے اس میں کچھ خاص ہو۔۔

یہ شخص لیاری سے ہمارا رکن صوبائی اسمبلی ہے …….. ! اپنی ساری تنخواہ تو حلقہ کے لوگوں پر خرچ کر تا ہی ہے . گزشتہ دہائیوں سے ہر عید بھی کھالیں جمع کرنے میں لگا دیتا ہے . عام کارکنوں کی طرح خون آلود کپڑے پرانی سی بائیک وہی کھال اٹھانے والی ٹوکری کیمپ پر موجودگی اور اپنے ہی حلقہ کی گلیوں میں ایک ایک کھال کے لئے مارے مارے پھرنا.

اس لئے کہ اسے یہ کھال نہیں لگتی ……! کسی غریب کی دوائی نظر آتی ہے .کسی طالبعلم کی فیس . کسی بیوہ کا راشن . کسی یتیم کا اسکول بیگ …… معلوم ہوتے ہیں۔ یہی نہیں ….! تصویر میں نظر آنے والا یہ مرکز ، کبھی الیکشن آفس بن کر لوگوں کو بتاتا ہے کہ ملک بدلنا ہے . تو اقتدار اہل ٹیم کے حوالے کرنا ہو گا . کبھی کے الیکٹرک کے خلاف لیاری کے مظلوموں کی آخری پناہ گا ہ بن جاتا ہے کبھی اپنی ٹیم میں حوصلہ بانٹنے اور کباب پارٹی کے ساتھ خوش گپیاں کرنے کا ٹھکانہ کبھی درس قرآن کی درس گاہ تو کبھی کھالیں جمع کرنے کا مرکز۔ اور یہی نہیں ……..

یہی شخص جب قانون سازی کے لئے اسمبلی میں ریفرنسز ڈاکیومنٹس اور دلائل سے بات کرتا ہے. جب اکیلا ہونے کے باوجود ایک طرف پی پی اور دوسری طرف پی ٹی آئی اور تیسری طرف ایم کیو ایم کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بولتا ہے اور ان کے کچے چٹھے کھولتا ہے . گرجتا اور برستا ہے لاجواب کر دیتا ہے. تب بھی یہی کھالیں ڈھونے والاعبدالرشید ہی ہوتا ہے . اور مزید یہی نہیں مقامی تھانہ ہو یا سرکاری اسپتال سرکاری انتظامیہ ہو یا لیاری گینگ کے بچے کھچے لوگ یہ سب کے سامنے دبنگ ہے کھڑا ہوتا مقابلہ کرتا ہے بے باک بھی ہے اور جی دار بھی۔۔

ہو حلقہ یاراں تو بریشم کی طرح نرم
رزم حق و باطل ہو تو فولاد ہے مومن

شاباش پیارے عبدالرشید شاباش …..! معوذ امریکا سے آئے ہوئے ہیں آپ کے حلقہ کے اس مقتول گارڈ کے لئے وہاں فنڈنگ کرتے رہے ہیں چاہتے ہیں آپ کے ہاتھوں اس تک پہنچیں آپ پر بھروسہ جو ہے۔۔

لگے رہو … ڈٹے رہو!

Leave a Reply

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: